VideosZakir Naik

QUR’AN AND MODERN SCIENCE COMPATIBLE OR INCOMPATIBLE | LECTURE + Q & A | DR ZAKIR NAIK



Dr Zakir Naik | Qur’an and Modern Science – Compatible or Incompatible? | CHENNAI Full Length
Video Code (QMSCIM_FLEN)

Qur’an and Modern Science – Compatible or Incompatible?
(Peace Vision of Islam-Chennai 2008, Madrasa-e-Azam Hr. Sec. School, Chennai, India, 12th January 2008)

PLEASE VISIT OUR OFFICIAL WEBSITES
www.irf.net
www.facebook.com/zakirnaik
www.plus.google.com/+Drzakirchannel
www.twitter.com/zakirnaikirf
www.youtube.com/drzakirchannel
www.dailymotion.com/drzakirnaik

source

Related Articles

46 Comments

  1. Doctor Zakir Nayak mashallah bhot hubsorat bayan Karta hai Allah sab sai bara hai Allah nai dunya banayai hai sab Allah ka hai phir osnai insan paida Kya apni ebadat Kai liyai phir osnai tarteeb sai paigambar baija dunya Mai wor Quran Mai pori dunya ka tarteeb hai Quran sedha Rasta dekata hai

  2. All religions are man made. 3/4 of the stories Quran are edited copies from Biblical myths and legends, which were made up by writers of the books that formed the Bible, or copied from ancient Babylonian, Greek, Canaanite and Egyptian myths.

    The similarities do not support the common divine origin, because these stories contradict science and proven history through archeology and comparative parallel human history.

    Biblical and Quranic morality is also focused on supremacy, exclusion, land annexation in the name of the divine, enslavement of women as sex slave, acceptance of slavery and belief in superstition, non existent beings, magic and the power of prayers..

    Also a childish belief in eternal heaven and hell with various degrees of bodily pleasures or sadistic torture for ever and ever and ever…

    ..

  3. After watching this video, i made a decision. I'm done watching christian muslim debates. They have NOTHING on us. They go by feeling, we go by signs and evidence. All they do is lie, and promote paganism. They do nothing but push sunday school sayings without any backing. This video reaffirmed my faith and alhamdullilah, all i need is the Quran, ahadeeth, and Allah's mercy inshallah.

    Several things he mentioned here won Nobel prizes. If the west wants to be fair, they should posthumously award several of them to sayidunnah Muhammad (pbuh) for them, if they believe sayiddunah muhammad wrote the quran (istaghfarullah). It's very similar with what they do with arab scientists during the islamic golden age. They promote the fact that western scientists developed all these theories and hypotheses, when muslim scholars developed them centuries before. I've always believed in credit where credit is due. If someone doesn't do that, i really do not respect them.

    Thank you for a wonderful, clear, irrefutable talk Dr Naik, and inshallah allah rewards you well in this life and the hereafter.

  4. The ancient Greek philosopher Pythagoras (circa 570–495 BCE) is often credited with proposing the idea that the Earth is a sphere. However, it was later Greek philosophers, such as Parmenides and Empedocles, who further developed this concept. The widely accepted understanding of a spherical Earth gained prominence with the work of Aristotle (384–322 BCE) and later became a well-established belief in the Hellenistic world.

  5. جو ہمارے یونیورس کو کنٹرول کر رہا ہے اور یہی اسے تباہ بھی کرے گا ۔ جو لائٹ سے انٹر ایکٹ نہیں کرتا پے ۔ دونوں بگ بینگ کے بعد فورا بن گئے تھے ۔ ہمین یہ تو پتہ چلتا ہے کہ کچھ ہورہا ہے لیکن یہ پتہ نہین کیوں ہورہا
    ہم اس کے ایفیکٹ کو دیکھتے ہین ۔ gravitational lensing… vims ہمیں نہیں پتہ کہ ڈارک انرجی کیا ہے ۔۔ دو نیوٹران تارے آپس میں ٹکرا رہے تھے ۔ اسپییس میں vacume innergy.. یہ کوسموس کو کنٹرول کرنے کے لیے آپس میں لڑ رہی ہیں ۔۔ اسٹار گیس کے بادل سے بنے تھے ۔ یہ ایک طرح سے اسٹارس کی نرسری تھی ۔۔ ہائیڈروجن نے شرواتی اسٹارس بنائے ۔۔ یونیورس کا اسٹرکچر کیسے بنا ؟ یونیورس کو تہس نہس کرنا ڈارک انرجی ایک زیادہ طاقتور فورس بن کر ابھری ۔
    ایک فورس جس میں repulsive force..
    یونیورس کے سب سے خالی حصے ہوتے ہیں
    ڈارک انرجی کا دبدبہ قائم ہے ۔۔ اصلی خطرہ ہے ڈارک انرجی سے ۔ خالی ٹھنڈا اسپیس ۔۔۔ اور یونیورس ختم ہوجائے گا ۔۔ یہاں کچھ بھی پکا نہیں ہے ۔۔ cosmological constant ان کی سب سے بڑی گلطی تھی ۔۔
    ہم انسان وکاس کرپائیں ۔۔ یہ ڈارک نہیں ہے کیونکہ اسی سے ہمارا وجود ہے ۔۔
    ***
    یونیورس کی شروعات کب اور کیسے ہوئی؟
    ایک وقت ایسا تھا جب کوئی اسٹار نہیں تھا ۔
    ہر دشا میں ایک دوسرے سے دور جارہے ہیں ۔
    یہ آج تک کی سب سے بڑی کھوج ہے ۔
    1997 سوپر نوا کی تلاش ۔۔۔ وہ اصل میں بہت تیز ہورہا تھا ۔ اڈم کی کھوج تھی ۔ ایک ستارہ جو یونیورس سے زیادہ پرانا لگ رہا تھا جسے 1450 پرانا ۔۔ فیڈنگ ہیٹ کو اسٹڈی کرنے والے شروعاتی سالوں کی کھوج کرتی ہیں ۔ نگ بینگ کی بچی ہوئی تصویر cwmd
    Cosmic microwave background
    Plank satellite آج کے کوسموس کا میپ بنا پائے ۔ باقی کئی چیزوں کے بارے میں غلط پیں ۔ یونیورس کے بارے میں ہماری سمجھ میں ۔۔۔ ینیورس کی اسپیڈ کو بڑھتا دیکھکر
    ڈارک انرجی چیزوں کو تیززی سے دور ڈھکیلتا ہے ۔ 70 % یونیورس اس ڈارک انرجی سے بنا ہے ۔ ڈارک میٹر بہت عجیب ہے ۔ اس میں ماس ہے ۔ Gravitational lensing.. پم یقین کے ساتھ نہیں کہہ سکتے کہ وہ کتنا پرانا ہے ۔۔
    ہمیں 95% یونیورس کو نہیں سمجھتے ۔
    ڈارک میٹر کا میپ بنایا ۔۔ ہائیڈروجن گیس اور کوسمک گرد و غبار کا پھیلا ہوا ایک عظیم بادل تھا ۔۔۔ روفا ورچول ریڈیو ٹیلسکوپ یورپین ۔۔ تاکہ وہ پہلا ایٹم ملے جو یونیورس میں بنا تھا ۔ ہمارے فزکس کے لاز کی سمجھ میں کمی ہے ۔۔
    ایک کرانتی کاری آئیدیا یہ کہ ہم ایک پاکٹ یونیورس میں رہ رہے ہین ۔۔ ابھی بھی کافی ساری کھوج ہوسکتی ہین اور کافی بدلاو ہوسکتے ہیں ۔۔

  6. قرآن پوری دنیا کے انسانوں کو ایک خالق کے بارے میں بتاتا ہے ۔
    قرآن کی سب سے پہلی آیہ کریمہ ہے :

    إقرأ بإسم ربك الذي خلق o خلق الإنسان من علق o ( سورہ العلق )
    پڑھو اپنے رب کے نام سے جس نے پیدا کیا ۔
    انسان کو خون کے لوتھڑے سے پیدا کیا ۔

    اللہ تعالی سب سے پہلے یہ بتا رہے ہیں کہ وہ اس کائنات اور انسان کا خالق ہے ۔ ایک انسان کو ایک خالق پر ایمان لانا ضروری ہے ۔ اس کائنات میں رہتے ہوئے اللہ کی ذات کے انکار کا کوئی جواز نہیں ہے ۔
    جو سائنسداں ایک خالق کو نہیں مانتے ، وہ غلط اور جہالت پر ہیں ۔ ایک خالق کو نہ ماننا سائنس نہیں بلکہ جہالت ہے ۔
    اللہ تعالی نے قرآن میں اپنی نشانیاں بیان کی ہیں ۔ سائنسدانوں کے سامنے اللہ کی نشانیاں آتی ہیں لیکن وہ ان سے اعراض کرتے ہیں

    … و هم عن آياتها معرضون o

    آپ ہرگز اللہ کی ذات کا انکار نہ کریں ۔ کائنات کی ہر چیز اللہ کی ذات پر ایمان رکھتی ہے اور اسے سجدہ کرتی ہے ۔ اللہ کو سجدہ کرنا کمال انسانیت ہے ۔ اگر کوئی اللہ کی ذات کا انکار کرتا ہے تو اس کائنات سے اس کا تعلق منقطع ہوجاتا ہے ۔

  7. تخلیق حقیقت ہے اور ارتقا ایک غیر معقول بات ہے اور یہ صرف مفروضہ ہے ۔

    اللہ نے آدم کو پیدا کیا اور ان سے ان کا جوڑا پیدا کیا ۔ اور ان دونوں کو جنت میں رکھا ۔
    یہ بیان قرآن میں ہے ۔ اللہ نے جتنی بات ضروری سمجھا اتنا قرآن میں بیان فرما دیا ۔

    اللہ تعالی کا بیان حقیقت پر مبنی ہے کیوں کہ وہ خالق ہئ اور ارتقا صرف مفروضہ ہے جو ظن و تخمین پر مبنی ہے ۔

    پھر آدم اور ان کی زوجہ کو جنت سے زمین پر منتقل کردیا ۔ ان دونوں سے زمین پر بہت سارے مرد اور عورتیں پیدا ہوئے اور پھیلے ۔
    اس وجہ سے اللہ قرآن میں سارے انسانوں کو
    " ادم کی اولاد " کہتا ہے ۔
    تمام انسان ایک مرد اور ایک عورت کی اولاد ہیں یہ برکلے یونیورسٹی کے سائنسدانوں کی ایک ٹیم کی تحقیق ہے ۔ انہوں نے ارتقا کے بارے
    میں بہت غور کیا لیکن اس کے لیے ان کو اپنی تحقیق میں کوئی گنجائش نہیں نکلی ۔
    اس تحقیق کے بارے میں کیا کہا جائے گا ؟
    برکلے یونیورسٹی سے اس بارےمیں رجوع کیا جاسکتا ہے ۔

  8. خلا میں روشنی کی رفتار سے تیز سفر

    سائنسدانوں کا نظریہ بدل رہا ہے اور وہ اس طرف جارہے ہیں کہ روشنی کی رفتار یا اس سے تیز سفر کرنا ممکن ہے ۔
    اب سائنسداں وارپ ڈرائیو ( Warp drive ) بنا رہے ہیں جس سے کائنات میں روشنی کی رفتار سے تیز سفر  کرنا ممکن ہو سکے گا ۔
    جس کے ذریعہ ہم اسمان کے دور دراز تاروں تک سفر کرسکیں گے ۔ اس کائنات میں ایسی جگہیں بھی ہیں جہاں روشنی کی رفتار سے تیز سفر کیا جا سکتا ہے ۔
    کیا کائنات کے الگ الگ حصوں میں روشنی کی رفتار الگ الگ ہوسکتی ہے ۔ روشنی کے بارے میں سائنسدانوں کے نظریات میں تبدیلی آرہی ہے ۔ ان کا کہنا ہے کائنات کی عمر کے ساتھ روشنی کی رفتار بھی بدلی ہے ۔ روشنی کی رفتار کی حد کے بارے میں آئنسٹائن کا نظریہ بھی بھی زیر بحث آگیا ہے ۔ ان کا کہنا ہے کہ
    کائنات کی گہرائی میں جانے ایسی معلومات سامنے ارہی ہین جن کی وجہ سے فزکس کے قوانین پر از سر نو غور و فکر کی ضرورت نظر آرہی ہے ۔ آئنسٹائن کا نظریہ Theory of Relativity کوانٹم ورلڈ کے مخالف ہین ۔ اس دنیا میں Sub Atomic particles کے انتہائی حیرت انگیز اور غیر یقینی برتاؤ سے
    بحث کی جاتی اور انہیں سمجھنے کی کوشش کی جاتی ہے ۔

  9. Have you seen that which you emit? Meaning they haven't yet understood that it's the male sperm that determines the gender.. Almighty Allah.. only recently they stopped blaming wives..

  10. The utter nonsense of the Koran

    The Queen of Sheba
    "We bestowed on David and Solomon knowledge  in judging men and in the language of the birds and other matters;  (-)  And Solomon inherited from David the gift of prophesy and knowledge ; and he said, O men, we have been taught the language of the birds,"    (-)    "And he examined the birds, that he might see the lapwing,"   (-)  "Wherefore do I not see the lapwing?"   (-)    "I will assuredly punish it with a severe punishment , by plucking outfits feathers and its tail and casting it into the sun so that it shall not be able to  guard against excessive thirst; or I will slaughter it; or it shall bring me a manifest convincing proof showing its excuse. – And it tarried not long before it presented itself unto Solomon submissively, and raised its head and relaxed its wings; so he forgave it; and he asked it what it had met with during its absence; and it said, I have become acquainted with that wherewith thou hast not become acquainted , and I have come unto thee from Sheba (a tribe of El-Yemen) with a sure piece of news. I found a woman reigning over them. named Bilkees, and she hath been gifted with everything that princes require, and hath a magnificent throne. (Its length was eighty cubits (120'!); and its breadth, forty cubits (60'!); and its height, thirty cubits (45'!);   (-)   Solomon said to the lapwing, We will see whether thou hast spoken truth or whether thou art of the liars."    (-)    
    (-)  (-)   "Solomon had made it on its being said unto him that her legs and feet were hairy like the legs of an ass. And when she saw it, she imagined it to be a great water, and she uncovered her legs, that she might wade through it; and Solomon was on his throne at the upper end of the palace, and he saw that her legs and her feet were handsome.  (-)
    "And he desired to marry her; but he disliked the hair upon her legs; so the devils made for him the depilatory of quick-lime, wherewith she removed the hair, and he married her; and he loved her, and confirmed her in her kingdom."         Sura 27

  11. Islam zindabad Quran zindabad sunnat zindabad tablighi jamaat zindabad 🕍🕌🕋🕌🕍🕋🕌🕍🇫🇰🇬🇸💒😭🇸🇭🇸🇸🇺🇳🇹🇿🇻🇺🏰🇺🇦🤩🇺🇬🇿🇲🇨🇳🇼🇸🇭🇲🇽🇰🇻🇨🇻🇨🇳🇺🇳🇺🇺🇾🇺🇸🏩🇻🇬🇻🇪

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *


Back to top button